31

اللہ کے دین کو نافذ کے لئے اسلامی حکومت ناگزیر ہے،دردانہ صدیقی 

 

کراچی 13 اکتوبر ( ) اقامت دین کا بنیادی کام دعوت کامنظم پھیلاؤ ہے، جس کانتیجہ اسلامی فلاحی ریاست کا قیام ہے، انبیاء  علیہ السلام کی دعوت کے اجزاء میں بھی ایک اہم جز نظام عدل کا قیام بھی ہے جو معاشرے میں اطمینان اور عالمی امن کے قیام کا ضامن ہے،ان خیالات کا اظہار حلقہ خواتین جماعت اسلامی پاکستان کی سیکرٹری جنرل دردانہ صدیقی نے آن لائن تفہیم منصوبہ ورکشاپ  برائے صوبائی صدور، اضلاع اور مرکزی شعبہ جات کے نگرانات کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔انہوں نے کہا کہ قرآن ہدایت کا سرچشمہ ہے اور افراط و تفریط کے درمیان انصاف کی بات کہنا دین ہے۔اللہ کے دین کو عملاً نافذ کرنے کے لیے رائج سیاسی نظام کے ذریعے قوت کی فراہمی ناگزیر ہے۔ یہ قوت ملت اسلامیہ کی آنے والی نسلوں کی بہترین تربیت سے ممکن ہے۔اپنی نسلوں کو ملک و ملت کا سرمایہ بنانے کے لیے ماؤں کا کردار بہت اہم ہے۔ورکشاپ کے دوسرے دن  عائشہ سید، حمیرا طارق، جاوداں فہیم  اور نائلہ اقتدار نے بھی خطاب کیا۔مقررین نے کہا کہ یہ ضروری ہے کہ اجتماعیت کا ہرفرد اپنی ذمہ داری سے آگاہ ہو۔ معاشرے میں دین کا پیغام پہنچانا دین کے قیام کے لیے کوششیں اور دوسروں کو اپنا ہم خیال بنانا ہر مسلمان کا مشن ہونا چاہیے۔ قرآن انسان کو ایک بہترین منتظم بنانا چاہتا ہے، اگر ہمیں اسلامی انقلاب کی منزل کو اپنانا ہے تو اس کے لیے بھرپور منصوبہ بندی کرنا ہوگی، تب ہی ہماری جدوجہد کامیابی کی منزل حاصل کر سکے 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں