65

*توہین آمیزخاکے: مغرب کے مکروہ چہرے بے نقاب ہوگئے۔دردانہ صدیقی* *امت کا بچہ بچہ اپنے نبیؐ کی ناموس کی حفاظت جان سے بڑھ کر کرتا ہے ٗجماعت اسلامی حلقہ خواتین

کراچی(پاسبان نیوز)حلقہ خواتین جماعت اسلامی پاکستان کی سیکرٹری جنرل دردانہ صدیقی نے فرانس میں ایک مرتبہ پھر اسلامو فوبیا اور توہینِ رسالت صلی اللہ علیہ وسلم کی تازہ لہر کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ یورپ اور مغرب بظاہر مہذب ہونے کا لبادہ پہنے پھرتے ہیں، مگر حقیقت یہ ہے کہ پیغمبر اسلام کی شان میں گستاخی اور شعائر اسلام کے خلاف ان کے بغض نے ان کے مکروہ چہروں کو بے نقاب کردیا ہے۔ فرانس یہ جان لے کہ امت کا ہر بچہ جوان بزرگ اور خواتین سب اپنے نبی کی ناموس کی حفاظت اپنی جان سے بڑھ کر کرنا جانتے ہیں۔ فرانسیسی جریدے میں اہانت پر مبنی کارٹون کی اشاعت اور پھر اس کی سرکاری سرپرستی کے خلاف اپنے مذمتی بیان میں دردانہ صدیقی کا کہنا تھا کہ ان فتنہ پروروں کی اتنی جرات اس لیے ہوتی ہے کہ بدقسمتی سے مسلم دنیا کے اکثر حکمران اپنی دینی غیرت و حمیت کا مظاہرہ کرنے سے قاصر ہیں۔ اگر پوری امت مسلمہ کے حکمران مکمل اتحاد و یکجہتی اور قوت کے ساتھ مل کر اس مغربی و یورپی دہشت گردی کا جواب دیں تو مجال ہے کہ دنیا میں کہیں بھی کوئی رہبرِ انسانیت ؐ کی شان میں گستاخی کا سوچے۔ انہوں نے اقوام متحدہ، او آئی سی سمیت دیگر بین الاقوامی فورمز کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کروڑوں مسلمانوں کے جذبات مجروح ہونے اور دنیا میں نقصِ امن کا خدشہ پیدا ہونے کے باوجود ان عالمی فورمز کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگتی، لیکن جب ردِ عمل میں کہیں کچھ ہوجائے تو پھر یہ فوراً تمام مسلمانوں پر دہشت گردی کا لیبل چسپاں کرنے لگ جاتے ہیں۔ عالمی اداروں کا یہ دہرا معیار اب کسی صورت قابل قبول نہیں۔ انہوں نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر فرانس سے سفارتی و تجارتی تعلقات منقطع کیے جائیں، جبکہ خارجی سطح پر دنیا بھر میں اس حوالے سے فعال کردار ادا کرتے ہوئے اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ آئندہ پیغمبر اسلام ؐسمیت تمام مقدس مذہبی شخصیات کا احترام اور تکریم ملحوظِ خاطر رکھا جائے۔انہوں نے عوام سے بھی فرانسیسی اشیاء کے بائیکاٹ کی اپیل کی اور ماہ ربیع الاول میں سیرت طیبہ کا مطالعہ اور سنتوں کو اپنانے پر زوردیا۔#

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں